Untitled Document
Google
Web
mashriqkashmir.com
Untitled Document
کشمیر اب ایک عالمی مسئلہ بن چکا ہے : میرواعظ

سرینگر/۱۹ستمبر 
حریت کانفرنس کے سربراہ میرواعظ عمر فاروق نے کہا ہے کہ اب کشمیر کوئی سرحدی یا علاقائی تنازعہ نہیں بلکہ عالمی مسئلہ بن چکا ہے۔
لندن میں ایک پریس کانفرنس میں حریت چےئرمین نے کہا کہ اب کشمیر بھارت اور پاکستان کے درمیان کوئی سرحدی یا علاقائی تنازعہ نہیں بلکہ یہ ایک عالمی مسئلہ بن چکا ہے جس کا حل نہ صرف جنوب ایشیائی خطے بلکہ اقوام عالم میں امن و خوشحالی کی نوید بن سکتا ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ اب یہ عالمی برادری کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ عالمی سطح پر امن وخوشحالی کی کوششوں کو تقویت پہنچانے کیلئے مسئلہ کشمیر کو حل کرنے میں اپنا رول زیادہ سنجیدگی کے ساتھ ادا کریں۔
حقوق انسانی کی پامالیوں خصوصاً گمنام قبروں کی دریافت کے معاملے کا ذکر کرتے ہوئے میرواعظ عمر فاروق نے اس بات پر زور دیا کہ عالمی حقوق انسانی اداروں کو اصل حقائق منظر عام پر لانے کیلئے اپنی ٹیموں کو کشمیر روانہ کرنا چاہیے ۔ میرواعظ عمر فاروق نے اس سلسلے میں یورپین یونین اور دیگر عالمی اداروں سے اپیل کی کہ وہ جموں وکشمیر میں جاری حقوق انسانی پامالیوں کے واقعات پر روک لگانے کیلئے اپنا رول ادا کرتے ہوئے بھارت پر اس بات کیلئے زور ڈالیں کہ وہ جموں وکشمیر میں لاگو کالے قوانین کو جلد سے جلد منسوخ کرے ۔
بھارت اور پاکستان کے درمیان جاری مذاکراتی عمل کی حمایت کرتے ہوئے میرواعظ عمر فاروق نے اس موقف کی تائید کی کہ مختلف نوعیت کے مسائل اور تنازعات کو مذاکرات کے ذریعے ہی حل کیا جاسکتا ہے ۔ میرواعظ عمر فاروق نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کو جلد سے جلد حل کرنے کیلئے بھارت اور پاکستان کے درمیان معیاد بند‘ نتیجہ خیز اور بامعنیٰ مذاکرات ہونے چاہیں ۔ اس کے ساتھ ہی میرواعظ عمر فاروق نے اس موقف کا اعادہ کیا کہ ہند پاک مذاکراتی عمل میں کشمیریوں کی شمولیت کو یقینی بنایا جانا چاہیے ۔ ان کا کہنا تھا کہ سہ فریقی مذاکرات کے ذریعے مسئلہ کشمیر کا کوئی قابل قبول ، منصفانہ اور پائیدار حل تلاش کیا جاسکتا ہے ۔ 
میرواعظ نے کہا کہ جموں کشمیر کے مختلف علاقوں میں بے نام قبروں کی دریافت اس تلخ حقیقت کا منہ بولتا ثبوت ہے کہ لامحدود اختیارات حاصل ہونے کے نتیجے میں فوج اور فورسز اہلکاروں نے نہ جانے کتنے معصوم لوگوں پر جنگجو ہونے کا لیبل چسپاں کر کے انہیں فرضی جھڑپوں میں ہلاک کر کے بناء کفن دفن سپرد خاک کردیا ۔ انہوں نے کہا کہ مذاکرات کے عمل کو صحیح سمت دینے کیلئے لازم ہے کہ بھارت جموں کشمیر میں اعتماد کی بحالی کیلئے کالے قوانین کو منسوخ کرنے کے علاوہ حقوق انسانی کی سنگین خلاف ورزیوں میں ملوث فوجی اور فورسز افسروں و اہلکاروں کے خلاف قانونی کارروائی شروع کرے ۔

Untitled Document
Untitled Document
© COPY RIGHT THE DAILY NIDA-I-MASHRIQ ::1992-2007
POWERED BY WEB4U TECHNOLOGIES::e-mail